اللہ کا فخر

کبھی آپ ان لوگوں کی زندگی کا مطالعہ کریں جن کا تعلق اللہ پاک سے مضبوط ہو تو آپ ایک بات دیکھ کر حیران رہ جائیں گے کہ ان کا تعلق اللہ پاک کے ساتھ بڑا حساس ہوتا ہے۔ یہ تعلق ایک معصوم بچے اور ماں جیسا ہوتا ہے۔ بالکل ایسے ہی جیسے ماں کسی اور طرف دیکھ بھی لے تو بچہ بے چین ہو جاتا ہے اور بچے کو کوئی اور کسی بھی نظر سے دیکھے، ماں کی نظر میں ہوتا ہے۔

کچھ عرصہ پہلے میں کچھ پریشان تھا۔ کوئی بھی ایسی وجہ تھی جس میں سچا ہونے کے باوجود مجھے رگیدا جا رہا تھا۔ ایک دوست میری حالت دیکھ کے فرمانے لگے کہ جب اللہ پاک سے وعدہ کر لیا ہے تو پھر غیر اللہ سے ہمہ قسمی امید لگانا عبث ہے اور کسی نا کسی مقام پہ انسانوں سے متعلقہ ایسا سب کچھ شرک کے ضمرے میں آتا ہے۔ اللہ پاک رشتوں کے معاملے میں بہت نازکی سے پالن کرتے ہیں۔

جسم پہ ایک کپکپی سی طاری ہوئی۔ بڑی دیر روتا رہا۔

وقت تھا ، گزر گیا۔

پھر یہ وقت دوبارہ اترا۔ کیونکہ یہ ایک دائروی عمل ہے۔ انسان کو بار بار آزمایا جاتا ہے۔ جن کو جہاں روکنا ہو، اس لمحے سے آگے ان کی رسی دراز ہو جاتی ہے اور آزمائش کا عمل رک جاتا ہے۔ جن کو آگے جانا ہو، ان کی ہر ہر سانس آزمائش ہے۔ ہر سانس میں غفلت کا احتمال رہتا ہے۔

خیر بات کسی اور سمت نکل گئی۔

کہنا میں بس اتنا چاہ رہا تھا کہ انسان اللہ پاک کا فخر ہے۔ اس فخر نے ہی اسے مشرف کرنا ہے اگر وہ اس کو اس کے مقام پہ رکھے گا۔ ورنہ عبادت کو اللہ پاک کے پاس بھی کمی نہیں اور دوزخ جنت بھی اپنی جگہ قائم ہیں۔ اللہ پاک کی صفات میں زیادہ تر صفتیں اسی فخر کا احاطہ کرتی ہیں۔

اللہ پاک ہم سب کو مثبت رکھیں۔ آمین۔ بہزاد

One Reply to “اللہ کا فخر”

  1. Always feel satisfied with your writings ,May Allah give you more success and vision to live this llife in best way ameen.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *